Uncategorized

Poetry in Urdu for friends

Ab Jo Hona Hey Who Ho Jaey Mira Nuqsaan Bhi
Dosto’n Ke Waastey Haazir Hey Meri Jaan Bhi

اب جو ہونا ہے وہ ہو جائے مرا نقصان بھی
دوستوں کے واسطے حاضر ہے اپنی جان بھی

Saath Chaltey Hen Hamesha Un Ke Seena Taan Kar
Doston Par Yeh Nahi Hota Koi Ehsaan Bhi

ساتھ چلتے ہیں ہمیشہ  اُن کے سینہ تان کر
دوستوں پر یہ نہیں ہوتا کوئی احسان بھی

Sab Hi Piarey Hen Mirey Hamdard Hen Dil Hen Mira
Un Mein Kuch Hen Phool Jaisey Aur Kuch Shaitaan Bhi
سب ہی پیارے ہیں  مرے ہمدرد ہیں دل ہیں مرا
اُن میں کچھ ہیں پھول جیسے اور کچھ شیطان بھی

Ronaqen Sab Zindagi Ki Un Ke Dam Sey Hen Sada
Warna Ho Sakti Thi Meri Zindagi Weeran Bhi
رونقیں سب زندگی کی اُن کے دم  سے ہیں سدا
ورنہ  ہو سکتی تھی میری زندگی ویران بھی

Har Museebat Mein Mujhey Un Ka Sahara Chahye
Taal Detey Hen Who Ho Jitna Bara Toofan Bhi
ہر مصیبت  میں مجھے اُن کا سہارا چاہیے
ٹال دیتے ہیں وہ ہو جتنا بڑا طوفان بھی

Kis Qadar Anmol Rishta Hey Jahan Mein Dosti
Ban Gaey Hen Jaan Se Piarey Yahan Anjaan Bhi
کس قدر انمول رشتہ ہے جہاں میں  دوستی
بن گئے ہیں جان  سے پیارے یہاں انجان بھی

Is Tara Se Ham Nibhaen Dosti Ka Yeh Safar
Dekh Kar Saara Zamana Khush Bhi Ho Hairan Bhi
اس طرح سے ہم نبھائیں دوستی کا یہ سفر
دیکھ کر سارا زمانہ خوش بھی ہو حیران بھی 

Related Articles

Leave a Reply

Your email address will not be published. Required fields are marked *

Check Also
Close
Back to top button